ڈیل کے مطابق رقم دینے سے انکار پر التان دورہ ادھورا چھوڑ کر چلے گئے

کاشف ضمیر کی ترک اداکار اینگن التان کے ساتھ مبینہ فراڈ کی مزید تفصیلات سامنے آ گئیں

18

ترک اداکار اینگن التان اچانک واپس ترکی کیوں چلے گئے، مختصر دورے کے پیچھے چھپی اہم وجہ سامنے آئی۔تفصیلات کے مطابق اینگن التان المعروف ارطغل غازی کو پاکستان لانے والے کاشف ضمیر پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ انہو ں نے ترک اداکار کو پاکستان بلایا لیکن معاہدے کے مطابق پوری رقم نہیں دی۔۔

ڈیل کے مطابق رقم دینے سے انکار پر التان دورہ ادھورا چھوڑ کر چلے گئے
اینگن التان کو دراصل ایک نجی کمپنی کی طرف سے برانڈ ایمبیسیڈر بنانے کے لیے بلایا گیا تھا جس کے لیے ان سے دس لاکھ ڈالرز کا معاہدہ کیا گیا تھا۔

 

انہیں ایڈوانس میں پانچ لاکھ ڈالرز کی ادائیگی کی گئی جس کے بعد انہوں نے پاکستان آنے کا اعلان کیا اور باقی رقم پاکستان میں آنے پر دینے کا وعدہ کیا گیا۔

 

کاشف نے اینگن التان کو کہا کہ پارٹی کی طرف سے پانچ لاکھ ڈالر کا چیک آچکا ہے ۔

آپ ترکی پہنچیں تو چند دنوں میں آپ کو پیسے مل جائیں گے لیکن جب انگین التان نے ترکی جا کر کاشف سے رابطہ کیا تو کاشف کی طرف سے کوئی جواب نہ ملا۔

 

بعد ازاں ترک اداکار نے پاکستانی حکام سے رابطہ کیا تو معلوم ہوا کہ کاشف سیالکوٹ کا نوسر باز ہے اور اس کے خلاف اس سے قبل بھی فراڈ کی بہت سی ایف آئی آرز درج ہیں۔

اس بات کا انکشاف بھی ہوا کہ اینگن آلتن کو پہلی بار پاکستان مدعو کرنے والی کنسٹرکشن کمپنی کی بھی کوئی حقیقت نہیں بلکہ وہ بھی فراڈ ہے۔

گذشتہ روز کاشف ضمیر کو گرفتار کرنے کے لیے ایس ایس پی انویسٹی گیشن کی زیر نگرانی کارروائی کی۔

 

پولیس نے ارطغل غازی کا کردار نبھانے والے ترک اداکاراینگن التان کو بلانے والے نوسر باز کاشف ضمیر کی گرفتاری کے ساتھ اسلحہ بردار ساتھیوں کو بھی گرفتار کرلیا۔ پولیس نے بتایا کہ کاشف ضمیر اور دیگر ملزمان کی جانب سے دوران آپریشن مزاحمت بھی کی گئی تھی۔

 

اس حوالے سے اب ایک اور انکشاف سامنے آیا ہے۔بتایا گیا ہے کہ کاشف ضمیر نے ترک اداکار اینگن آلتن کو پاکستان بلانے کےلیے دس لاکھ ڈالرز کا معاہدہ کیا تھا اور انہیں صرف آدھی رقم ادا کی، رقم پوری نہ ملنے پر ارطغل غازی کے ہیرو اینگن وطن واپس روانہ ہوئے گئے۔