اماراتی حکومت نے دیگر ممالک میں پھنسے تارکین کے لیے ڈیڈ لائن کی مُدت میں توسیع کر دی

6 ماہ سے زائد عرصہ سے امارات سے باہر مقیم افراد 31 مارچ 2021ء تک واپس آ سکتے ہیں

9

متحدہ عرب امارات کی جانب سے 31 دسمبر 2021ء کوان افراد کو امارات واپسی کے لیے دی گئی ڈیڈ لائن ختم کر دی تھی جنہیں امارات سے باہر رہتے ہوئے چھ ماہ سے زائد مُدت گزر گئی تھی۔ یہ صورت حال ہزاروں پاکستانیوں کے لیے بھی پریشان کُن تھی، جو مختلف وجوہات کی بناء پر امارات واپس نہیں جا سکے تھے۔ تاہم اب اماراتی ویزوں سے متعلق ادارے GDRFA نے شاندار خبر سُنا دی ہے جس کے تحت جو لوگ امارات سے 6 ماہ سے زائد عرصہ سے باہر ہیں ان کے لیے ڈیڈ لائن کی مُدت میں مزید تین ماہ کی توسیع کر دی گئی ہے۔

یہ افراد 31 مارچ 2021 تک امارات واپس آ سکتے ہیں۔ فلائی دُبئی اور ایئرانڈیا ایکسپریس کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ جو اماراتی ویزہ ہولڈرز 6 ماہ سے زائد عرصہ سے یو اے ای سے باہر مقیم ہیں انہیں 31 مارچ 2021ء تک امارات واپس آنے کی اجازت ہو گی۔

ایئر لائنز کے مطابق 180 روز سے زائد عرصہ سے دیگر ممالک میں پھنسے اماراتی ویزہ ہولڈرز کو GDRFA نے 31 مارچ سے پہلے واپس آنے کی اجازت دے دی ہے۔

ان افراد کے پاس کارآمد ویزہ اور GDRFA کا اجازت نامہ ہونا ضروری ہے۔دُبئی کے حکام نے تمام ایئر لائنز کو اس حوالے سے ایک سرکلر کے ذریعے اطلاع دے دی ہے۔ فلائی دُبئی نے اپنی ویب سائٹ پر اعلان کیا ہے ”اگرآپ کے پاس امارات کا رہائشی ویزہ ہے، اور آپ امارات سے باہر 180 روز سے زائد عرصہ سے مقیم ہیں، تو آپ 31 مارچ 2021ء تک امارات واپس آ سکتے ہیں۔

“ایئر لائنز کی جانب سے سنائی گئی اس خوش خبری پر ان پاکستانیوں اور بھارتیوں نے بہت خوشی کا اظہار کیا ہے جو کئی ماہ سے امارات سے باہر اپنے وطن میں پھنسے ہوئے ہیں۔ اور 31 دسمبر کی ڈیڈ لائن کے بعد بھی اپنے وطن میں ہی پھنسے رہ گئے تھے، اور امارات واپسی کے معاملے پر بہت پریشان تھے۔اب ان کی فکر مندی ختم ہو گئی ہے۔