پیپلز پارٹی کے رہنما راشد ربانی دوسری دفعہ کورونا میں مبتلا ہوگئے

راشد ربانی کو سانس لینے میں شدید تکلیف کا سامنا، ضیاالدین اسپتال میں وینٹی لیٹر پر منتقل کر دیا گیا

20

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما راشد ربانی دوسری دفعہ کورونا میں مبتلا ہوگئے۔راشد ربانی کو گزشتہ رات ضیا الدین اسپتال کراچی منتقل کیا گیا۔اس سے قبل بھی راشد ربانی میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی تھی۔

 

راشد ربانی کا شمار کراچی سے تعلق رکھنے والے پیپلز پارٹی کے سینئر رہنماؤں میں ہوتا ہے۔وہ دو ماہ قبل کورونا کا شکار ہوئے تھے جس کے بعد 30 قرنطینہ میں رہنے کے بعد ان کے کورونا ٹیسٹ کی رپورٹ منفی آئی تھی۔

 

 

 

تاہم جو اینٹی بوڈیز کا ٹیسٹ تھا اس میں اس بات کی تشخیص ہوئی کے راشد ربانی کو کورونا ہوا ہی نہیں تھا۔راشد ربانی کی طبیعت گزشتہ ایک ہفتے سے خراب تھی۔گزشتہ رات انہیں سانس لینے میں شدید تکلیف محسوس ہوئی جس کے بعد انہیں اسپتال منتقل کیا گیا۔

 

جہاں ان کی کورونا ٹیسٹ کی رپورٹ دوبارہ مثبت آئی ہے۔بتایا گیا ہے کہ راشد ربانی کے پھیپھڑے اور سینے میں انفیکشن زیادہ ہے جس وجہ سے انہیں سانس لینے میں تکلیف کا سامنا ہے۔

 

 

 

راشد ربانی کو وینٹی لیٹر پر منتقل کر دیا گیا ہے۔راشد ربانی کے اہلخانہ نے لوگوں سے دعائے صحت کی اپیل کی ہے۔راشد ربانی کے پھیپھڑے دس فیصد آکسیجن لے رہے ہیں جس وجہ سے انھیں ابھی تک وینٹی لیٹر پر ہی رکھا گیا ہے۔

 

راشد ربانی کی عمر 53 سال ہے،ان کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ راشد ربانی کو جب پہلے کوروناوائرس ہوا تھا تو ان کی طبیعت اتنی زیادہ خراب نہیں تھی تاہم اس بار انہیں سانس لینے میں شدید تکلیف کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

 

خیال رہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 583 نئے کیسز رپورٹ ہوئے، اس طرح ملک میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 3 لاکھ 16 ہزار 934 ہوگئی ہے،

 

پنجاب میں ایک لاکھ 272، سندھ میں ایک لاکھ 39 ہزار 195، خیبر پختونخوا میں 38 ہزار 175، بلوچستان میں 15 ہزار 460، گلگت بلتستان میں 3 ہزار 886، اسلام آباد میں 17 ہزار 9 جب کہ آزاد کشمیر میں 2 ہزار 937 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ این سی او سی کے مطابق کورونا کا شکار مزید 9 افراد زندگی کی بازی ہار گئے جس کے بعد ملک میں اس وبا سے جاں بحق افراد کی تعداد 6544 ہوگئی۔

 

3 لاکھ 2 ہزار 275 مریض اب تک اس وبا کو شکست دے چکے ہیں۔ اس طرح ملک میں اس وقت کورونا کے مصدقہ فعال مریضوں کی تعداد 8 ہزار 115 ہے۔