صوبائی وزیر تعلیم مراد راس : طلبا و طالبات کو معیاری تعلیم فراہم کریں

Provincial Minister for Education Murad Ras: Provide quality education to students

17

ساہیوال: صوبائی وزیر تعلیم مراد راس نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت معیار تعلیم کو بہتر کرنے،سرکاری سکولوں میں ضروری سہولیات کی فراہمی اور بچوں کو رٹا لگانے سے نجات دلانے کے لئے دورس اصلاحات کر رہی ہے جس کے نتائج آنا شروع ہو گئے ہیں –

اساتذہ کی ذمہ داری ہے کہ وہ طلبا و طالبات کو معیاری تعلیم فراہم کریں اور ان میں نصابی تعلیم حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ ہم نصابی سرگرمیوں میں حصہ لینے کا شوق بھی پیدا کریں تا کہ وہ معاشرے کا کار آمد شہری بن سکیں –

صوبائی حکومت ایک سال کے اندر آن لائن انصاف اکیڈمی قائم کرے گی جس میں پہلے مرحلے میں نویں سے بارہویں کلاسز کے تمام مضامین کے لیکچرز موجود ہونگے جس سے طلبا و طالبات کو نجی اکیڈمیوں سے نجات ملے گی –

انہوں نے یہ بات ڈپٹی کمشنر آفس میں محکمہ تعلیم کے افسران اور تحریک انصاف کے مقامی رہنماؤں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی جس میں ڈپٹی کمشنر بابر بشیر،سی ای او ایجوکیشن ڈاکٹر ارشد خان،ڈی اوز خادم حسین موہل،سمیعہ انور چوہدری اور راشد لطیف،سیاسی رہنماؤں رانا آفتاب احمد خان،نبیلہ خان،راؤ محمد اسلم خاں،میاں نوید اسلم اور سید رضوان شاہ نے بھی شرکت کی –

انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی سردار عثمان بزدار کی ہدایت پر صوبائی حکومت سکولوں میں اساتذہ اور سٹاف کی کمی مرحلہ وار دور کر رہی ہے اور بہت جلد نئی بھرتی کی جائے گی –

صوبے بھر میں 70ہزار مزید اساتذہ کی ضرورت ہے جس کیلئے مقامی سطح پر ٹیچرز کنٹریکٹ پر بھرتی کئے جا رہے ہیں – صوبائی وزیر تعلیم مراد راس نے بتایا

کہ سکول ایجوکیشن کا سب سے بڑا مسئلہ پرائمری کے بعد 70فیصد طلبا و طالبات کا مزید تعلیم جاری نہ رکھنا ہے جس پر قابو پانے کے لئے اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں جس میں ڈویژنل سطح پر موبائل سکولز کا قیام اور پرائمری سطح تک اردو میں تعلیم دینا بھی شامل ہے –

انہوں نے افسران پر زور دیا کہ وہ سکولوں کی انسپکشن کا عمل جاری رکھیں تاکہ اساتذہ دلجمعی سے تدریسی فرائض سر انجام دیں -اجلاس میں ضلعی صدر رانا آفتاب احمد خاں نے بے روز گاری اور مہنگائی کو سب سے بڑا مسئلہ قرار دیتے ہوئے

صوبائی وزیر سے اپیل کی کہ وہ سکولوں میں خالی آسامیوں پر بھرتی شروع کریں تا کہ بے روز گار افراد کو روز گار فراہم کیا جا سکے – ضلعی سیکرٹری انفارمیشن میاں نوید اسلم نے سکولوں میں ہیلتھ سنٹرز بنانے کی تجویز دی اور اپنی خدمات پیش کیں جس پر صوبائی وزیر نے مسرت کا اظہار کرتے ہوئے شہر کے 2سکولوں میں ہیلتھ سنٹرز قائم کرنے کی ہدایت کی –

اس سے پہلے سی ای او ایجوکیشن ڈاکٹر ارشد خان نے بتایا کہ ضلع ساہیوال میں 1157سرکاری سکول کام کر رہے ہیں

جن میں 33ہائر سکینڈری سکول اور 258سکینڈری سکول بھی شامل ہیں –

انہو ں نے مزید بتایا کہ ضلع بھر میں اساتذہ کی 11491پوسٹ موجود ہیں جن میں سے 1641خالی ہیں جس سے تعلیمی سرگرمیاں شدید متاثر ہو رہی ہیں –

قبل ازیں صوبائی وزیر نے نواحی گاؤں چک نمبر 118/9- ایل میں اقلیتی رکن قومی اسمبلی شینیلہ روت کے فنڈز سے ایلیمنٹری گرلز سکول میں نئے تعمیر کئے جانے والے کمروں کا افتتاح کیا -صوبائی وزیر اقلیتی امور اعجاز عالم آگیسٹن بھی ان کے ہمراہ تھے –