’اللہ وقار یونس کو ہدایت دے‘،محمد عامر اور بائولنگ کوچ میں لفظی گولہ باری

عامر نے ورک لوڈ کی وجہ سے ٹیسٹ کرکٹ نہیں چھوڑی :بائولنگ کوچ،پھر یہ سرکار وقار یونس ہی سب بتا سکتے ہیں ، اللہ ہدایت دے جو ایسی سوچ رکھتے ہیں: فاسٹ بائولر

16

قومی کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی محمد عامر اورقومی ٹیم کے باولنگ کوچ وقار یونس کے درمیان لفظی گولہ باری دیکھنے کو ملی ہے ۔

’اللہ وقار یونس کو ہدایت دے‘،محمد عامر اور بائولنگ کوچ میں لفظی گولہ ..

تفصیلات کے مطابق قومی ٹیم کے کپتان وقار یونس نے نیوز کانفرنس کے دوران کہا تھا کہ ’مجھے نہیں لگتا کہ بائولنگ کے بوجھ کی وجہ سے عامر کو ٹیم سے باہر کیا گیا ہے کیونکہ میں نے دیکھا کہ وہ حال ہی میں وہ لنکا پریمیئر لیگ میں کھیل رہا تھا،

 

اس نے خود کو وائٹ بال کرکٹ تک محدود کیا ہے اور وہ ٹیسٹ کرکٹ میں کھیلنا نہیں چاہتا تھا جو اس کا ذاتی فیصلہ ہے‘۔

 

قومی ٹیم کے بائولنگ کوچ کے بیان پر محمد عامر نے بھی ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے رد عمل کا اظہار کیا جس میں ان کا کہنا تھا کہ ’’پھر یہ سرکار وقار یونس ہی سب بتا سکتے ہیں ، اللہ ہدایت دے جو ایسی سوچ رکھتے ہیں‘‘ ۔

 

واضح رہے کہ محمد عامر کو نیوزی لینڈ کے خلاف 3 میچز کی ٹی ٹونٹی سیریز کے لئے پاکستانی سکواڈ سے باہر کردیا گیا تھا ، اس وقت وہ لنکا پریمیر لیگ (ایل پی ایل) میں گال گلیڈی ایٹرز کی نمائندگی کررہے ہیں۔

 

قومی ٹیم سے ڈراپ ہونے کے بعد انہوں نے ہیڈ کوچ مصباح الحق کو اسی طرح کا جواب دیتے ہوئے اپنے ٹویٹ میں لکھا تھا کہ ’’مصباح صاحب ہی بتا سکتے ہیں، ٹیم کے لیے نیک خواہشات ہیں‘۔

 

اپنے ایک اور پیغا م میں وقار یونس کا کہنا تھا کہ ”اللہ بہت بڑا ہے ، انسان کچھ بھی نہیں ، انسان جو مرضی کر لے اللہ جو چاہتا ہے وہی ہوتا ہے“۔